دنیا

نیا کورونا وائرس زیادہ مہلک ہے: برطانوی وزیراعظم بورس جانسن

برطانوی وزیراعظم بورس جانسن نے خبرار کیا ہے کہ نیا کورونا وائرس زیادہ مہلک ثابت ہوسکتا ہے۔

معاونین کے ہمراہ پریس بریفنگ میں برطانوی وزیر اعظم نے کہا کہ 24 گھنٹوں میں 49 ہزار سے زائد متاثرہ افراد کواسپتال داخل کیا گیا۔ بورس جانسن نے بتایا کہ کورونا وائرس کے باعث مزید ایک ہزار 401 افراد ہلاک ہوئے، عالمی وباء سے انتقال کرنے والے افراد کی تعداد 95 ہزار 981 ہوگئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ویکسین وائرس کی نئی اور پرانی قسم کے خلاف یکساں موثر ہے، 24 گھنٹوں میں چار لاکھ افراد کو ویکسین لگائی گئی۔ جانسن نے کہا کہ تقریبا 5.3 ملین افراد کو ویکسین کی پہلی خوراک موصول ہوگئی ہے کیونکہ حکومت فروری کے وسط تک انتہائی کمزور گروہوں کے 15 ملین افراد کو ویکسین کی خوراک دینے کے اپنے مقصد کو حاصل کرنے کے لئے کوشاں ہے۔

چیف ہیلتھ آفیسر کرس وائٹی نے بتایا کہ انگلینڈ میں ہر 55 میں سے ایک میں وائرس کا مرض لاحق ہے جبکہ لندن میں یہ شرح 35 میں سے ایک تک پہنچ گئی ہے۔ چیف حکومتی سائنسدان پیٹرک والنس نے کہا کہ اگرچہ نئے وائرس سے متاثرہ افراد کے اعداد و شمار بہت کم ہیں اس کے باوجود وائرس کا یہ نیا ورژن پرانے وائرس کے مقابلے 30 فیصد زیادہ مہلک ہوسکتا ہے۔

ماہرین نے بتایا کہ برطانیہ میں استعمال ہونے والی آسٹر زینیکا / آکسفورڈ اور فائزر ویکسین نئے تبدیل شدہ وائرس کے خلاف کارآمد ہیں۔

برطانوی وزیراعظم نے کہا کہ لوگ احتیاطی تدابیر پر عمل درآمد کو یقینی بنائیں، کورونا ایس او پیز کی پابندی نہ کرنے والوں سے سختی سے نمٹا جائے گا۔

پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button