دنیا

انڈونیشیا میں 6.2 شدت کا زلزلہ، متعدد افراد ہلاک اور زخمی

کویت اردو نیوز 15 جنوری: انڈونیشیا میں زلزلے کے نتیجے میں گھروں اور عمارتوں کو گرنے سے کم از کم 42 افراد ہلاک ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق جمعہ کی آدھی رات کے بعد ایک مضبوط زلزلے نے انڈونیشیا کے سلویسی جزیرے کو ہلا کر رکھ دیا، متعدد مکانات اور عمارتیں گر گئیں ، لینڈ سلائیڈنگ کے سبب کم از کم 42 افراد ہلاک ہوگئے۔ 6.2 شدت کے زلزلے سے 600 سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔ حکام ابھی بھی متاثرہ علاقوں میں ہلاکتوں اور نقصانات کے مکمل پیمانے کے بارے میں معلومات اکٹھا کررہے تھے۔ گرنے والے مکانات اور عمارتوں کے ملبے میں کئی افراد کے پھنس جانے کی اطلاعات ہیں۔

زلزلے سے اسپتال کا کچھ حصہ خراب ہوگیا اور مریضوں کو باہر ہنگامی خیمے میں منتقل کردیا گیا۔ امدادی کارکنوں نے سات مریضوں اور عملے کو نکالنے کے لئے جدوجہد کی جو کئی ٹن ملبے تلے دبے ہوئے تھے۔ کئی گھنٹوں کے بعد ایک کھدائی کرنے والا مدد کے لئے آیا اور بازیاب افراد نے چار زندہ بچ جانے والوں اور تین لاشوں کو بازیافت کیا۔ ہزاروں بے گھر افراد کو عارضی پناہ گاہوں میں منتقل کیا گیا۔

امریکی جیولوجیکل سروے نے بتایا کہ زلزلے کا مرکز مغربی سلویسی صوبے کے مامجو ضلع کے جنوب میں 36 کلومیٹر 18 کلو میٹر کی گہرائی میں تھا۔ انڈونیشیا کی تباہ کن ایجنسی کا کہنا ہے کہ مامجو میں گرے ہوئے مکانات اور عمارتوں کے ملبے میں پھنسے 34 لاشوں کی بازیابی کے بعد ہلاکتوں کی تعداد 42 ہوگئی۔

اس میں کہا گیا ہے کہ کم از کم 300 مکانات اور ایک صحت کلینک کو نقصان پہنچا ہے اور ضلع میں عارضی پناہ گاہوں میں لگ بھگ 15،000 افراد کو رکھا گیا ہے۔ بہت سے علاقوں میں بجلی اور فون بند ہیں۔

مغربی سلویسی انتظامیہ کے سکریٹری محمد ادریس نے ٹی وی ون کو بتایا کہ صوبائی دارالحکومت ماموجو میں گرنے والوں میں گورنر کے دفتر کی عمارت بھی شامل ہے اور وہاں پر بہت سے لوگ پھنسے ہوئے ہیں۔

امدادی کارکن سیدر رحمنجایا نے کہا کہ بھاری سامان کی کمی کی وجہ سے گرے ہوئے مکانات اور عمارتوں سے ملبے کو صاف کرنے کی کوششوں میں رکاوٹ ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ان کی ٹیم گورنر کے دفتر ، ایک اسپتال اور ایک ہوٹل سمیت آٹھ عمارتوں میں پھنسے درجنوں افراد کو بچانے کے لئے کام کر رہی ہے۔

صدر جوکو وڈوڈو نے ٹیلیویژن خطاب میں کہا کہ انہوں نے اپنے سماجی وزیر اور فوج ، پولیس اور ڈیزاسٹر ایجنسی کے سربراہوں کو ہنگامی رد عمل کے اقدامات اور تلاش اور بچاؤ کے کاموں کو جلد سے جلد انجام دینے کا حکم دیا ہے۔

وڈوڈو نے کہا کہ “میں حکومت اور تمام انڈونیشی عوام کی جانب سے متاثرہ افراد کے اہل خانہ سے اظہار تعزیت کرنا چاہتا ہوں۔ یاد رہے کہ گذشتہ ہفتے جاوا بحیرہ میں ایک انڈونیشی سریوجایا ایئر جیٹ طیارہ حادثے کا شکار ہو گیا تھا جس میں جہاز کے عملے سمیت تمام مسافر ہلاک ہو گئے تھے۔

پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button