دنیا

طیب اردگان کے بیان پر فرانس نے ترکی سے اپنا سفیر واپس بلا لیا

کویت اردو نیوز 25 اکتوبر: ترکی کے صدر طیب اردگان کی جانب سے توہین رسالت کا مرتکب ہونے والے فرانسیسی صدر کو تنقید کا نشانہ بنانے پر فرانس نے ترکی سے اپنے سفیر کو واپس بلا لیا۔

تفصیلات کے مطابق ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن کی جانب سے فرانسیسی صدر عمانویل ماکروں کی ذہنی صحت سے متعلق سوال اٹھانے پر بطور احتجاج پیرس نے انقرہ سے اپنے سفیر کو مشورے کے لیے واپس بلوا لیا ہے۔ فرانس نے ترک صدر کے تبصرے کو ’’ناقابل قبول‘‘ قرار دیا ہے۔

فرانسیسی صدر کے دفتر سے منسلک ایک اہلکار نے خبر رساں ادارے ’’اے ایف پی‘‘ کو بتایا کہ صدر ایردوآن کا تبصرہ ناقابل قبول ہے۔ زیادتی اور بدتمیزی بات کرنے کا کوئی طریقہ نہیں ہے۔ ہم رجب ایردوآن سے اپنی پالیسی بدلنے کا مطالبہ کرتے ہیں کیونکہ یہ ہر لحاظ سے خطرناک ہے۔‘‘

عہدیدار نے مزید بتایا کہ ترکی میں تعینات فرانسیسی سفیر کو اس معاملے پر مشاورت کے لیے پیرس واپس بلوایا جا رہا ہے۔ وہ صدر ماکروں سے ملاقات میں اس معاملے پربات کریں گے۔

مزید پڑھیں: توہین رسالت پر کویت سے زبردست کام کر دکھایا

صدر ایردوآن نے اس سے قبل فرانسیسی صدر کو ان کی مسلمانوں کے حوالے سے پالیسی پر برا بھلا کہتے ہوئے عمانویل ماکروں کو اپنے ’’دماغی معائنے‘‘ کا مشورہ دیا۔

حوالہ
العربیہ
پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ