ٹیکنالوجی

ورجن ہائپرلوپ کے ذریعے ریاض سے جدہ کا سفر صرف 76 منٹ میں

کویت اردو نیوز 31 جنوری: جدہ ، مکہ مکرمہ ، ریاض ، کویت ، ابوظہبی ، دبئی اور مسقط کو ملانے والی ورجن ہائپرلوپ کی تفصیلات جلد ہی منظر عام پر آنے کی امید ظاہر کی جا رہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق اگلے ہفتے متوقع ہونے والا بگ 5 سعودی شو میں ورجن ہائپرلوپ ون کی تفصیلات سامنے آنے کا امکان ہے۔ ورجن ہائپرلوپ ون NEOM کا مقصد بحیرہ احمر پروجیکٹ اور قدیہ گیگا پروجیکٹس کو ایک دوسرے کے ساتھ منسلک کرنا ہے۔ کولن رائس جو Arabian Gulf Company کے نائب صدر ہیں اس نمائش سے خطاب کریں گے جس کی توقع 10 سے 13 مارچ تک جدہ سنٹر فار فورمز اور ایونٹس میں ہوگی۔ کولن رائیس ہائپرلوپ ٹکنالوجی سعودی عرب کے وژن 2030 کو فراہم کی جانے والی مدد کی وضاحت کریں گے۔ بڑے 5 سعودی نے یہ معلومات فراہم کی ہیں۔ ہائپرلوپ جدہ ، ریاض ، ابوظہبی ، دبئی ، مسقط اور کویت کو آپ میں منسلک کرے گا

کولن رائس کی تقریر کی تفصیلات شائع ہونے والی ہیں اس کے باوجود تقریر کی تصویری جھلک سے معلوم ہوتا ہے کہ ہائپرلوپ ٹکنالوجی نیوم ، بحیرہ احمر پروجیکٹ ، جدہ ، مکہ مکرمہ ، ریاض ، کویت ، ابوظہبی ، دبئی اور مسقط کو مربوط کرنے میں کس طرح مدد دیتی ہے۔

رائسز یہ بھی بتائیں گے کہ کس طرح ہائپرلوپ ٹکنالوجی لوگوں کو صرف 76 منٹ میں ریاض سے جدہ پہنچائے گی۔ لوگوں کا ایک پوڈ شیڈ گاڑی کے ساتھ محض 58 منٹ میں ریاض سے کنگڈم کے نیوم میگاپروجیکٹ تک سفر کیا جائے گا۔ ہائپرلوپ کی متوقع رفتار 1250 کلومیٹر فی گھنٹہ ہوگی جس کا مطلب ہے کہ یہ ہوائی سفر کے مقابلے میں تیز اور کم وقت استعمال ہوگا۔

کولن رائس نے پہلے ہی بتا دیا ہے کہ اس طرح کا انفراسٹرکچر سعودیوں کو جدید ترین ٹیکنالوجی اپنانے میں مدد فراہم کرے گا۔ اس سے درآمدات اور برآمدات میں بھی مدد ملے گی۔ رائس نے وضاحت کی کہ چونکہ ہائپرلوپ ریاست میں مینوفیکچرنگ کا مرکز بنائے گا جس سے مہ صرف سعودی عرب کی درآمدات اور برآمدات میں تیزی آئے گی بلکہ جی ڈی پی میں بھی اضافے کی توقع کی جارہی ہے کیونکہ سعودیوں کو ہائی ٹیک ملازمتوں کے آغاز کے ساتھ ہی تفریح ​​حاصل ہوگی۔ نوجوان سعودیوں کو پہلے سے ہی مہارت سے آراستہ ہونے کا موقع فراہم کیا گیا ہے۔

اس کمپنی نے گذشتہ سال لاس اینجلس ، امریکی کیمپس میں 21 نوجوان سعودیوں کو انٹرنشپ فراہم کرنے کے لئے پہلے ہی پرنس محمد بن سلمان فاؤنڈیشن (Misk) کے ساتھ شراکت کی تھی۔ تازہ ترین تفصیلات سے پتہ چلتا ہے کہ 3 سعودیوں نے پہلے ہی انٹرنشپ مکمل کرلی ہے اور اب ورجین ہائپرلوپ ون میں کل وقتی ملازمتوں پر خدمات حاصل کی گئیں۔

ورجن کی ہائپرپلوپ ایک کمپنی نے اس کے مستقبل میں ٹرانسپورٹ کانفرنس کے لئے ٹیسٹ ٹریک بنانے کے لئے سعودی عربیہ کی حکومت کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔ نئی تکنیک کے تحت ریاض سے جدہ کے سفر میں جدہ تک 76 منٹ تک رسائی حاصل کی گئی ہے جو دس گھنٹے کے قریب 10 منٹ سے زیادہ کے ساتھ ملحق ہے۔ اس منصوبے میں 124،000 ملازمتیں پیدا کرنے کے بھی مساوی ہیں۔

پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button