پاکستان

کویت نے وزیر اعظم عمران کے عالمی سطح پر قرض سے نجات کے اقدام کے مطالبے کی حمایت کی

اسلام آباد: وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کویت کے وزیر خارجہ شیخ ڈاکٹر احمد ناصر المحمد الصباح سے آج ٹیلی فون پر گفتگوکی۔ انہوں نے کورونا وباءاور باہمی دلچسپی کے امور پرتبادلہ خیال کیا۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کویت کی حکومت کی جانب سے کورونا وباءکی روک تھام کے لئے بروقت اور متحرک اقدامات کو سراہا۔ انہوں نے وزیر خارجہ ڈاکٹر احمد کو پاکستان میں کورونا وباءکی تازہ ترین صورتحال اور اس پر قابو پانے کے لئے حکومت پاکستان کے اقدامات سے آگاہ کیا۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاکہ کورونا عالمی وباءبنی نوع انسان کے لئے صدی کا سب سے بڑا چیلنج بن کر سامنے آئی ہے۔

وزیرا عظم عمران خان کے ترقی پزیر ممالک کے ذمے قرض میںمدد دینے کے عالمی اقدام کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے معاشی کساد بازاری کے اثرات میں کمی لانے کے لئے قریبی تعاون اور جاری بحران سے نمٹنے میں زیادہ وسائل بروئے کار لانے کی ضرورت پر زور دیا۔

وزیر خارجہ نے تشویش کا اظہارکرتے ہوئے کہاکہ بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر میں کمیونیکیشن پابندیوں کے سبب ادویات اور دیگر ضروری اشیاءکی فراہمی وترسیل میں رکاوٹیں حائل ہیں جس کے نتیجے میں کورونا وبا پھیلنے کے خطرات ہیں۔ انہوں نے بھارت کے اندر مسلمانوں کو کورونا کے حوالے سے بدنام کرنے اور ان کی کردار کشی کی بھارتی مہم پر بھی تشویش کا اظہار کیا۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے او۔آئی۔سی کو اس ضمن میں کردار ادا کرنے کے کویت کے مطالبے کو سراہا۔

وزیر خارجہ ڈاکٹر احمد نے کورونا وائرس سے درپیش چیلنجز سے نمٹنے کے لئے حکومت پاکستان کی کوششوں کو سراہا۔ انہوں نے کویت کی جانب سے وزیراعظم عمران خان کے قرض میں ریلیف کے اقدام کی حمایت کی۔ انہوں نے صحت، فوڈ سکیورٹی اور توانائی کے کلیدی شعبہ جات میں دوطرفہ تعاون میں اضافہ کی اہمیت پر زور دیا۔ وزیر خارجہ ڈاکٹر احمد نے کویت اور پاکستان تعلقات کے طویل المدتی سٹرٹیجک وژن کی اہمیت کو بھی اجاگر کیا۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کویت کے اپنے ہم منصب کو دورہ پاکستان کی دعوت دی۔ دونوں رہنماوں نے باہمی دلچسپی کے تمام امور پر قریبی رابطے میں رہنے پر اتفاق کیا۔

حوالہ: پاکستان وزارت خارجہ

پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

Open

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ