پاکستان

نگار جوہر پاکستان آرمی کی پہلی لیفٹیننٹ جنرل مقرر

اسلام آباد 01 جولائی: انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ پاک فوج نے نگار جوہر کو گزشتہ روز بروز منگل ان کے عہدے پر ترقی دے کر پہلی خاتون لیفٹیننٹ جنرل مقرر کر دیا ہے۔

آئی ایس پی آر نے بتایا کہ لیفٹیننٹ جنرل نگار جوہر نے پاک فوج کا پہلا سرجن جنرل بننے کی بھی تعریف کی۔ انہوں نے مزید کہا کہ وہ خیبر پختونخوا کے ضلع صوابی کے پنج پیر علاقے سے تعلق رکھتی ہیں۔

2017 میں لیفٹیننٹ جنرل نگار گوہر میجر جنرل کے عہدے تک پہنچنے والی تیسری خاتون آفیسر بن گئیں۔

یہ خبر بھی پڑھیں: ویزہ کی تجارت کرنے والے بچ نہیں سکتے: نائب وزیراعظم کویت

لیفٹیننٹ جنرل جوہر کا تعلق آرمی میڈیکل کور سے ہے اور وہ پاک فوج کے سابق افسر میجر (ر) محمد عامر کی بھانجی ہیں جو انٹر سروسز انٹیلیجنس (آئی ایس آئی) میں خدمات انجام دیتے تھے۔

لیفٹیننٹ جنرل نگار جوہر کے والد کرنل قادر نے بھی آئی ایس آئی میں خدمات انجام دیں۔ وہ اور ان کی اہلیہ تقریبا 30 تیس سال قبل ایک سڑک حادثے میں جاں بحق ہوگئے تھے۔

صوابی نے متعدد مرد جرنیل تیار کیے ہیں لیکن یہ پہلا موقع ہے جب کوئی عورت اس آرمی رینک تک پہنچی جس کا تعلق بھی اسی ضلع سے ہے۔

پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

Open

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ