کویت

تارکین وطن کی بجائے کویتی شہریوں کو رکھا جائے۔

کویت سٹی 19 مئی: روزنامہ عرب ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق رکن پارلیمنٹ الحمیدی السبیعی اور ان کے ساتھ مزید چار رکن پارلیمنٹ ممبران نے قومی اسمبلی میں ایک بل پیش کیا جس کے مطابق بل کی توثیق کے بعد چھ ماہ کے اندر کویت پیٹرولیم کارپوریشن (کے پی سی) اور اس کے ماتحت اداروں (کمپنیوں) میں کویتی شہریوں کو ملازمت دینے پر برتری کا اظہار کیا گیا ہے۔


اس بل کے تحت کویت پیٹرولیم کارپوریشن (کے پی سی) اور اس کی ذیلی کمپنیوں کو شہریوں کی آسامیوں کی تشہیر کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔ اگر خالی آسامیوں کے لئے کسی بھی کویتی شہری کی جانب سے درخواست نہیں دی جاتی ہے

تو غیر کویتی سے شادی کرنے والی کویتی خواتین کے بچوں کو متعلقہ ملازمت کا حقدار سمجھا جائے گا ان سب کے باوجود بھی اگر کوئی بھی کویتی شہری یا غیر کویتی سے شادی کرنے والی کویتی خواتین کے بچے متعلقہ ملازمت کے لیے درخواست نہیں دیتے تو اس صورت میں تارکین وطن کو وہ ملازمت ایک سال کے موزوں معاہدہ کے تحت دی جائے گی اور معاہدے کی تجدید اس وقت تک نہیں کی جائے گی جب تک اس متعلقہ ملازمت کے لیے کوئی کویتی شہری درخواست نہ دے ع

لاوہ ازیں اگر کویتی شہری ملازمت کے لئے درخواست دیتا ہے تو اس کی تقرری کی جائے گی۔ اس بل میں مشاورتی کمپنیوں کے ساتھ معاہدوں کی تجدید پر بھی پابندی ہے جبکہ غیر ملکی مشاورین کے معاہدوں کی تجدید اس وقت تک نہیں کی جاسکے گی جب تک کویتی شہریوں کے لئے اشتہار نہیں دیا جاتا اور اس پوسٹ کے لئے کوئی شہری درخواست نہیں دیتا ہے۔


معاہدے کے تحت کویتی ملازمین کو قانون پر عمل درآمد کے 6 ماہ کے اندر آندر کویت کی پالیسی کی بنیاد پر مقرر کیا جائے گا۔

حوالہ: عرب ٹائمز

پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ