کویت

8 دینار کاگیس سلنڈر بیچنے والی مافیا کا پردہ فاش

کویت سٹی 76 مئی: روزنامہ عرب ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق جلیب الشیوخ کوآپریٹو سوسائٹی کے ڈائریکٹر علی حسن نے انکشاف کیا کہ سیکیورٹی فورسز کی مشترکہ کاروائی سے کھانا پکانے کے گیس سلنڈروں کی ایک بلیک مارکیٹ کا انکشاف ہوا ہے جہاں 150 تاجروں کو گرفتار کیا گیا جو کہ موجودہ حالات کا فائدہ اٹھاتے ہوئے شارٹیج کی مد میں 8 دینار فی گیس سلنڈر کے حساب سے فروخت کرتے ہوئے پائے گئے جنہیں ضروری کاروائی کے لیے متعلقہ حکام کے حوالے کردیا گیا۔


انہوں نے مزید کہا کہ پچھلے کچھ عرصے سے گیس سلنڈر مارکیٹ سے غائب ہو رہے تھے جو کہ ایک غیر معمولی بات ہے کیونکہ 6000 سلنڈر یومیہ فراہم کئے جاتے ہیں جو کہ غیر معمولی تیزی سے فروخت ہو رہے تھے جس کی وجہ سے اس کی تحقیقات کا ارادہ کیا گیا۔ مشاہدے اور تفتیش کے بعد یہ بات سامنے آئی کہ کچھ تارکین وطن کرائے پر رکھے گئے تھے جو عام طور پر مختلف قومیتوں کے مزدور طبقے سے تعلق رکھتے تھے جنہیں ہر گیس سلنڈر کے عوض آدھا دینار ادا کیا جاتا تھا۔ وہ تارکین وطن مزدور خالی سلنڈر لے کر مختلف کپڑے بدل کر دوبارہ واپس آتے تھے اور خالی سلنڈر واپس کرنے کے بعد بھرا ہو گیس سلنڈر لے جا کر “ہاف لاری” میں رکھ دیتے تھے۔ سیکیورٹی فورسز کی جانب سے کارروائی کے دوران پکڑے جانے پر وہ گیس سلنڈر چھوڑ کر بھاگنے لگے۔


علی حسن نے وزیر سماجی امور اور محنت مریم العقیل اور نائب عبد العزیز الشعیب ، بریگیڈیئر ابراہیم الدعی اور جلیب خطے کے کمانڈر کے معاون کرنل میشال المطائری اور حکام کی قابل ستائش کاوشوں کا شکریہ ادا کیا۔ حسن نے بتایا کہ الفروانیہ گورنریٹ سیکیورٹی کے ڈائریکٹر بریگیڈیئر جنرل عبد اللہ صافہ اس وقت سائٹ پر موجود تھے اور ان پر مقدمہ درج کرکے انھیں تحویل میں لیا تھا۔

حوالہ: عرب ٹائمز

پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

Open

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ