کویت

سال 2020 کے دوران کویت کس کس صدمے سے دوچار ہوا

کویت اردو نیوز 26 دسمبر: مرحوم امیر کویت عزت مآب شیخ صباح الاحمد الجابر الصباح اور ان کے بڑے بیٹے شیخ ناصر صباح الاحمد الجابر الصباح کا انتقال کویت کے لیے ایک بڑا صدمہ تھا۔

تحریر جاری ہے‎

کویت کو گذشتہ سال کے دوران متعدد سابق وزراء اور اعلی عہدیداروں ، امیر شیخ صباح الاحمد الجابر الصباح کا بھاری دکھ اور صدمہ اٹھانا پڑا۔

شیخ صباح الاحمد نے 60 کی دہائی میں آزادی سے قبل کے زمانے سے اپنی زندگی کے اختتام تک کویت کی ترقی میں نمایاں کردار ادا کیا تھا۔ اقوام متحدہ کے ذریعہ انسانیت سوز ایکشن کے رہنما کی حیثیت سے ضرورت مند افراد کی مدد کرنے میں ان کی نمایاں خدمات کو سراہا گیا۔

شیخ صباح الاحمد کے انتقال کے کچھ ہی عرصے میں کویت نے سابق نائب وزیر اعظم اور وزیر دفاع شیخ ناصر صباح الاحمد الجابر الصباح ایک دور اندیشی رہنما کی وفات پر سوگ منایا جنہوں نے ترقی اور کویت میں بدعنوانی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کے لئے بھرپور کام کیا۔

مندرجہ ذیل رپورٹ کے مطابق امیر، متعدد سابق وزراء اور قائدین کے 2020ء کے انتقال کی تاریخیں درج کی گئی ہیں جنہوں نے کویت کی ترقی میں بھرپور کردار ادا کیا:

19 جنوری: وزارت اطلاعات کے سابقہ ​​انڈر سیکریٹری سعدون الجاسم کا 88 سال کی عمر میں انتقال ہوگیا۔

28 جنوری: قادسیہ کلب اور کویت کی قومی ٹیم کے سابق کھلاڑی فٹ بالر محمد المسعود 75 سال کی عمر میں چل بسے۔

12 فروری: کویت فٹ بال ایسوسی ایشن (کے ایف اے) کے سابق چیئرمین اور قادسیہ اسپورٹس کلب عبد العزیز المخلید کا 85 سال کی عمر میں انتقال ہوگیا۔

13 فروری: سابق گورنر فروانیہ عبدالحمید حجی کا 82 سال کی عمر میں انتقال ہوگیا۔

29 مارچ: تھیٹر کے اداکار اور فنون لطیفہ کے سرخیل سلیمان الیاسین 71 سال کی عمر میں چل بسے۔

30 مارچ: سابق وزیر اوقاف اور اسلامی امور کے ساتھ ساتھ سابقہ ​​اسلامی امور اور اسلامی چیریٹیٹ سوسائٹی کے چیئرمین یوسف الحجی کا انتقال 97 سال کی عمر میں ہوا۔ وہ کویتی خیراتی اداروں میں ایک سرکردہ شخصیت تھے۔

17 مئی: محقق اور مصنف محمد الابراہیم کا 84 سال کی عمر میں انتقال ہوگیا۔ وہ کویت کے پہلے اسکول المبارکیہ اسکول کے قیام میں کردار ادا کرنے کے سبب مشہور تھے۔

2 جون: ریٹائرڈ میجر جنرل سلیم الثور کا انتقال ہوگیا۔ وہ 74 سال کے تھے۔ انہیں عراقی قبضے کے خلاف کویت کے خلاف مزاحمت اور مشہور الجسور کی معروف جنگ کے کمانڈر کے طور پر یاد کیا جاتا ہے۔

12 جون: امیری دیوان کے مشیر اور سابق وزیر خزانہ عبدالرحمن الاطقی کا 92 سال کی عمر میں انتقال ہوگیا۔

12 جون: میڈیا کے مایہ ناز اہلکار فیصل الجینی کا انتقال ہوگیا۔ وہ 70 سال کے تھے۔ انہیں عرب اور کویتی پریس کا ستون سمجھا جاتا تھا۔

16 جون: سابق وزیر ٹرانسپورٹ حبیب جوہر حیات کا 86 کے آخر میں انتقال ہوگیا۔

17 جون: کویت نیوز ایجنسی کے سابق ڈپٹی چیئرمین اور کویتی جرنلسٹ ایسوسی ایشن کے اعزازی چیئرمین احمد بہبانی کا 79 سال کی عمر میں انتقال ہوگیا۔

29 ستمبر: امیری دیوان نے عزت مآب امیر کویت شیخ صباح الاحمد الجابر الصباح کی وفات پر سوگ منایا جو اپنی زندگی میں اپنے عظیم تر کارناموں اور نیک کاموں کے لئے مشہور ہیں۔ اقوام متحدہ کے سابق سکریٹری جنرل بان کیمون نے انہیں بحیثیت انسانیت پسند قائد کے خطاب سے نوازا تھا۔

24 اکتوبر: سماجی امور کے سابق سکریٹری عبدالرحمن المزروی کا انتقال ہوگیا۔ وہ 83 سال کے تھے۔

4 دسمبر: سابق وزیر پانی و بجلی اور کاروباری شخصیت عبد العزیز الشعی 49 سال کی عمر میں انتقال کر گئے۔ وہ ایک مشہور شخصیت تھے جنہوں نے متعدد شعبوں میں کویت کی ترقی میں حصہ ڈالا۔

20 دسمبر: امیری دیوان نے 72 سال کی عمر میں سابق نائب وزیر اعظم اور وزیر دفاع شیخ ناصر صباح الاحمد الجابر الصباح کی وفات پر سوگ کا اظہار کیا۔ مرحوم سابق امیر کویت شیخ صباح الاحمد الجابر الصباح کے بڑے بیٹے تھے۔

حوالہ
کونا
پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ