کویت

کویت وزراء کونسل کا ہنگامی اجلاس

کویت اردو نیوز 21 دسمبر: سوشل میڈیا سنٹر کے سربراہ طارق المزرم نے گزشتہ روز 21 دسمبر 2020 پیر کو رات 11 بجے سے کویت بین الاقوامی ہوائی اڈے پر آنے اور جانے والی تجارتی پروازوں کی معطلی کا اعلان کیا۔ پروازوں کی معطلی جمعہ یکم جنوری 2021 تک جاری رہے گی۔

تحریر جاری ہے‎

تفصیلات کے مطابق سول ایوی ایشن کی جنرل ایڈمنسٹریشن نے بیان کیا ہے کہ اس فیصلے کا آئندہ آنے والی صورتحال کی روشنی میں جائزہ لیا جائے گا جبکہ یہ واضح کردیا گیا ہے کہ کارگو طیاروں کو اس فیصلے سے خارج کردیا گیا ہے۔

وزیر صحت شیخ ڈاکٹر باسل الصباح نے سیف پیلس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ “ہمیں پوری شفافیت کے ساتھ کورونا وائرس سے نمٹنا ہے اور ہمیں وائرس کے نئے تناؤ کا مقابلہ کرنے کے لئے سنجیدہ موقف کی ضرورت ہے۔” انہوں نے مزید کہا کہ “ہم امید کرتے ہیں کہ عوام جاری کردہ فیصلوں کو سمجھے گی جو عوامی صحت کو برقرار رکھنے اور کورونا وائرس کی ملک میں نئی لہر کو روکنے کے لئے عوامی مفاد میں ہیں۔”

انہوں نے وضاحت کی کہ “بندش کا فیصلہ ایسے بڑے خطرات سے بچنے کے لئے کیا گیا تھا جس سے ملک کو خطرہ لاحق ہوسکتا ہے۔”

وزیر صحت شیخ ڈاکٹر باسل حمود الصباح نے کونسل کو عالمی , علاقائی اور مقامی سطح پر کورونا کی وبا کی تازہ ترین پیش رفت خاص طور پر کورونا وائرس کے نئے تناؤ کے ابھرنے کے بعد کی صورتحال پر رپورٹ پیش کی اور کونسل نے کویت کو صحت کی مثبت صورتحال کی یقین دہانی کروائی۔ وزیر صحت نے ملک میں صحت میں بہتری، استحکام اور اعدادوشمار کا حوالہ بھی دیا جو انفیکشن کی تعداد میں کمی کی تصدیق کرتے ہیں۔ کونسل نے کورونا وائرس سے نمٹنے کی کوششوں اور اس سے بچنے کے طریقوں سے متعلق تازہ ترین تیاریوں کا بھی نوٹس لیا۔

اس سلسلے میں کابینہ نے کورونا ایمرجنسی وزارتی کمیٹی کی سفارش کا جائزہ لیا اور مندرجہ ذیل فیصلے لئے:

  1. 21 دسمبر 2020 پیر رات 11 بجے سے جمعہ یکم جنوری تک کویت سے جانے اور کویت آنے والی تمام کمرشل پروازیں معطل کردی گئی ہیں تاہم کارگو طیارےاس فیصلے کا حصہ نہیں ہیں۔
  2. شپنگ اپریشنز کے علاوہ زمینی اور سمندری سرحدی بندرگاہوں کو بند کردیا گیا ہے۔
  3. وزارت داخلہ ، سول ایوی ایشن کی جنرل انتظامیہ ، کسٹمز کی عمومی انتظامیہ اور کویت پورٹس اتھارٹی کو فیصلے کی دفعات پر عمل درآمد کے لئے تفویض کیا گیا ہے۔

حوالہ
الرای
پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ