کویت

کویت: کورونا ویکسین کی دستیابی معاشی بحالی کا باعث بنے گی

کویت اردو نیوز 15 دسمبر: پانچویں مرحلے میں واپسی زندگی کی سرگرمیوں کو تیز کردے گی۔

تحریر جاری ہے‎

تفصیلات کے مطابق معمول کی زندگی میں واپسی اور کورونا ویکسین کی دستیابی معاشی بحالی کا باعث بنے گی۔ کچھ ماہ قبل کورونا بحران کے باعث ملک کی بیشتر کمپنیوں کو معاشی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا جبکہ بڑی کمپنیوں کو بھی اپنے مستقبل کی فکر لاحق ہوگئی تھی۔کمپنیوں کی آمدنی زیرو ہونے کی وجہ سے انہیں اپنے اخراجات میں واضح کمی کرنی پڑی۔ تاہم وزارت صحت کی جانب سے ابھرتے ہوئے کورونا وائرس کے خلاف “فائزر بائینٹیک” ویکسین کے

ہنگامی استعمال کا لائسنس جاری کرنے کے بعد اور کویت میں 10 دن کے بعد کورونا ویکسین کی دستیابی کی خبر نے مقامی کاروبار کے استحکام میں امید کی کرن پیدا کی ہے۔ ویکسین کی دستیابی اور صحت کی بحالی کاروباری شعبوں کے لئے مثبت نتائج پیدا کرے گی جو ویکسین کے آغاز کے ساتھ ہی متوقع ہیں جبکہ معمول کی زندگی کے پانچویں مرحلے کا آغاز بھی چند دنوں میں ہوجائے گا جس سے معمول کی سرگرمیوں میں تیزی دیکھنے کو ملے گی۔ کورونا ویکسین کی دس روز بعد دستیابی اور ویکسینیشن کے سلسلے کے آغاز اور گزشتہ چند روز میں کورونا کیسوں کی تعداد میں نمایاں کمی کے بعد متعلقہ حکام کی جانب سے عوام پر لگائی گئی کئی پابندیوں پر خاتمے کے لئے سفارشات جاری کرنے کے امکانات ہیں۔ کچھ شعبوں کو واپسی کی اجازت دینے جیسے سنیما گھروں یا ملک میں تجارتی میلوں کے انعقاد، عوام کو کھیلوں کے میچوں میں شرکت کی اجازت ملک میں تفریحی سہولیات کے دوبارہ کھلنے کا بھی سبب بنے گا۔ تمام سرکاری ایجنسیاں اور ریستورانٹس اور چھوٹی سرگرمیوں سے نقد بہاؤ میں اضافہ ہوگا جس سے معاشی سرگرمیوں کو تقویت ملے گی اور کورونا سے قبل کی طرح کمپنیوں اور بینکوں کے منافع میں آہستہ آہستہ اضافہ ہوگا۔

ماہرین کے مطابق یہ بھی توقع کی جارہی ہے کہ ملک میں دس دنوں کے بعد ویکسین کی دستیابی سے ہوائی نقل و حمل کے شعبے پر دباؤ کم ہوجائے گا کیونکہ امکان ہے کہ 34 کالعدم ممالک کے ساتھ ہوائی رابطے کی اجازت دے دی جائے۔ ایئر لائنز، سیاحت اور ٹریول آفسوں اور ہوٹلوں کے غیر معمولی نقصانات کورونا بحران کے آغاز سے ہی اب تک140 ملین دینار سے تجاوز کر چکے ہیں۔اس کے علاوہ ویکسین کی دستیابی کے بعد پانچویں مرحلے میں جانے سے تجارتی احاطے، کمپنی کے صدر دفاتر اور نمائش کے میدانوں کی سرگرمیوں میں اضافہ ہوگا۔ جزوی اور مکمل پابندی کی وجہ سے معطل کی گئی 150 سے زائد سرگرمیوں کی واپسی متوقع ہے جبکہ مشرف ایکزیبیشن گراؤنڈز کے ہالز کو کرونا کے بعد لوگوں کے علاج کے لئے ایک فیلڈ ہسپتال میں تبدیل کردیا گیا تھا۔اسی کے ساتھ ہی ویکسین کی دستیابی سے کویت میں شہریوں اور رہائشیوں کے اعتماد میں بھی اضافہ ہوگا جو خوردہ فروخت میں اضافے کا باعث بنے گا اور پھر گاہکوں کی واپسی پہلے کی طرح عام سطح پر خریداری اور اخراجات میں اضافے کا باعث بنے گی۔

چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں ٹریڈ اینڈ ٹرانسپورٹ کمیٹی کے چیئرمین خالد الخالد نے کہا کہ ملک میں مقیم شہریوں کے اعتماد اور حفاظت کی واپسی میں ویکسین کی موجودگی مثبت کردار ادا کرے گی۔ اسکا سب سے زیادہ فائدہ آمد و رفت اور سول ایوی ایشن کے شعبے کو ہوگا جو آنے والے دور میں معمول پر سفر کی واپسی سے یہ کمپنیوں کو ان کی پریشان کن حالت سے نکال دے گی۔نارتھ گلف ٹریڈنگ کمپنی کے ڈائریکٹر مارکیٹنگ خلدون عبدلحفیظ نے کہا کہ ویکسین کی دستیابی سے تمام شعبوں میں فروخت کی نقل و حرکت بحال ہوگی اور خریداری کی مانگ میں اضافہ ہوگا اس کے علاوہ وہ ریستورانوں کی سرگرمیوں میں بھی اضافہ کریں گے۔ عام طور پر چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار کو ترقی کے ایک بار پھر مواقع میسر ہونگے۔

حوالہ
الرای
پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ