کویت

کویت: زندگی معمول کی طرف لوٹنے کے امکانات روشن ہونے لگے

کویت اردو نیوز 01 دسمبر: وزراء کونسل نے اپنے ہفتہ وار اجلاس میں گزشتہ روز 7 دسمبر سے شروع ہونے والے گھریلو ملازمین کی واپسی کے منصوبے کی منظوری دے دی ہے۔

تحریر جاری ہے‎

یہ فیصلہ ایسے ہزاروں گھریلو ملازمین کے لئے ایک بڑی راحت کے طور پر سامنے آیا ہے جو ملک سے باہر پھنسے ہوئے ہیں۔ توقع ہے کہ گھریلو ملازمین کی اکثریت ہندوستان ، بنگلہ دیش ، سری لنکا اور فلپائن سے واپس آئے گی۔

کویتی شہری اپنی حکومت پر دباؤ ڈال رہے ہیں کہ وہ سفری پابندیاں ختم کریں تاکہ ان کے گھریلو ملازمین واپس آسکیں۔ گھریلو ملازمین کی فیسوں میں خاطر خواہ اضافہ ہوگیا ہے جس کی وجہ گھریلو ملازمین کی کمی اور کویت کی طرف سے عائد سفری پابندی ہے۔

کویت میں گذشتہ ہفتے کے دوران کورونا وائرس کے انفیکشن میں واضح کمی دیکھنے میں آئی ہے اور اس سے حکومت کو معمول پر واپس آنے کے منصوبے پر عمل درآمد کرنے کے حوالے سے اعتماد حاصل ہوا ہے۔

حکومتی ترجمان طارق المزرم نے واضح کیا کہ گھریلو ملازمین کے لئے لاجسٹک خدمات کی فراہمی ایک گھریلو کارکن کے لئے 270 دینار لاگت میں ہوگی جس میں سفری ٹکٹ شامل نہیں تاہم طے شدہ قرنطین مدت میں رہائش اور سہولیات کے اخراجات پورے کیے جائیں گے۔

وزیر صحت ڈاکٹر باسل الصباح نے وزراء کی کونسل کو ملک میں صحت کی صورتحال کے حوالے سے تازہ ترین رپورٹ پیش کی جس میں آج تک کے مثبت اعدادوشمار کی تفصیلات بتائی گئیں۔ ملک میں صحت کی صورتحال میں استحکام آیا ہے اور گذشتہ ہفتے سے لے کر آج تک ریکارڈ کی گئی تعداد خاص طور پر متاثرین اور دیکھ بھال میں نمایاں کمی دیکھنے میں آئی ہے جبکہ اموات اور شفایاب کیسوں کی تعداد میں 95.8 فیصد اضافہ ہوا۔

حوالہ
الرای
پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ