کویت

کویت: موسمی فلو کی ویکسین پہلے کویتی شہریوں کو دی جائے گی

کویت اردو نیوز 24 نومبر: فلو کی ویکسینیشن کے پہلے حقدار کویتی شہری ہوں گے۔

تحریر جاری ہے‎

روزنامہ القبس کی رپورٹ کے مطابق وزارت صحت نے انکشاف کیا ہے کہ وزارت رواں ماہ کے آخر میں موسمی انفلوئنزا ویکسین کی اضافی مقدار وصول کرے گی۔

روزنامہ قابل اعتماد ذرائع نے وزارت کے گوداموں میں نیوموکوکل ویکسین کے مستحکم اور محفوظ اسٹاک کی دستیابی کی نشاندہی کی ہے جہاں سے اسپتالوں اور احتیاطی مراکز کو ضرورت کے مطابق مریضوں کی تعداد اور تقرریوں کے مطابق ویکسین کی فراہم کی جاتی ہے۔

ذرائع نے مزید کہا کہ نئی ویکسینوں کی متوقع کھیپ زیادہ سے زیادہ افراد کو دی جائے گی۔ تارکین وطن کی بڑی تعداد بھی آنے والی مدت کے دوران موسم سرما کی ویکسین وصول کرے گی لیکن دستیاب مقدار کے مطابق تاہم کویتی شہریوں کی تعداد مکمل کرنے اور پیشگی تقرریاں حاصل کرنے والے شہریوں کی ویکسینیشن پہلے مکمل کی جائے گی۔

انہوں نے نشاندہی کی کہ موجودہ صورتحال میں بعض موسم سرما کی ویکسین کے لئے مقرر کردہ مراکز میں تقرری کی سلاٹ نہ ہونے کا مشاہدہ کیا گیا ہے جو ماضی کے مقابلے میں رواں سال شہریوں کی جانب سے ویکسین کی شدید مانگ کی تصدیق کرتا ہے۔ممکن ہے آنے والے دنوں میں ریزرویشن سسٹم پر تقرریوں کا دباؤ کم ہو اور ویکسین کی اضافی تعداد کے بعد تقرریوں میں آسانی ہو۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ صحت مراکز نے کچھ دن پہلے ہی ویکسین کی خوراکیں وصول کیں اور ان علاقوں میں میڈیکل اسٹاف اور نرسنگ باڈیز کے لئے ہر خطے کے لئے 5،000 ڈوز مختص کیا گیں۔ تمام حفاظتی مراکز میں ویکسین وزارت صحت کی ویب سائٹ پر طے شدہ تاریخوں کے مطابق دستیاب ہیں تاکہ شہریوں کو صحت کے مرکز میں جانے سے پہلے پیشگی اپوائنٹمنٹ حاصل کرنے میں مشکل نہ ہو۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس سال موسمی فلو کی ویکسین لینا بہت ضروری ہے اس حقیقت کو مد نظر رکھتے ہوئے کہ فلو اور کورونا وائرس بڑی حد تک مشترکہ علامات رکھتے ہیں۔

انھوں نے مزید کہا کہ انفلوئنزا کے خلاف مکمل تحفظ فراہم کرنے سے قبل ویکسین کو دو ہفتوں تک کی مدت درکار ہوگی اسکے بعد ہی مثبت نتائج سامنے آئیں گے۔

حوالہ
عرب ٹائمز
پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ