کویت

کویت: ڈی جی سی اے کو کمپنیوں کی طرف سے پیکج آفرز موصول ہونے لگے

کویت اردو نیوز 21 نومبر: DGCA نے قرنطین سینٹرز کی ذمہ داری اٹھانے سے انکار کردیا۔

روزنامہ الانباء کی رپورٹ کے مطابق وزراء کونسل جمعرات کو اپنے طے شدہ اجلاس میں ڈائریکٹوریٹ جنرل سول ایوی ایشن (DGCA) کی جانب سے 34 ممالک پر عائد پابندی ختم کرنے کے لئے پیش کردہ تجویز پر غور کیا جبکہ تازہ رپورٹ کے مطابق ڈی ڈائریکٹریٹ سول ایوی ایشن نے قرنطین مراکز کی مینٹینس کی ذمہ داری اٹھانے سے انکار کردیا ہے۔

روزنامہ کے ایک باخبر ذرائع کے مطابق ڈی جی سی اے نے کابینہ سے قرنطین مراکز کے انتظام میں حصہ لینے کی درخواست کی ہے کیونکہ ڈی جی سی اے کی ذمہ داریاں ہوائی اڈے کو چلانے اور ہوائی جہاز کی فراہمی کے لئے مختص ہیں۔

انہوں نے وضاحت کی کہ کویت اور ممنوعہ ممالک کے درمیان پروازوں کی واپسی سے متعلق ڈی جی سی اے کی تجویز پر وزراء کونسل کی رضامندی کے ساتھ کالعدم ممالک سے پروازوں کی واپسی کے لئے حالات سازگار ہیں۔ اس سلسلے کے آغاز میں کوئی رکاوٹ نہیں ہے اور قومی ایئر لائنز بھی طیارے میں احتیاطی تدابیر کے اطلاق کے لئے معائنہ کے مراکز کی فراہمی کے سلسلے میں تیار ہیں اور پہنچنے کے بعد سخت چیکنگ اور ادارہ جاتی قرنطین لازمی ہے۔

ڈی جی سی اے کو حال ہی میں ہوٹلوں اور رہائشی عمارتوں سمیت قرنطین خدمات فراہم کرنے میں مہارت رکھنے والی کمپنیوں کی طرف سے پیکج آفرز موصول ہوئی ہیں لیکن ان کمپنیوں کی قیمتیں انتہائی بڑھا چڑھا کر پیش کی جارہی ہیں اور 14 دن کے عرصہ کے لئے 600 دینار سے 700 دینار فی فرد تک پہنچ رہی ہیں جس میں فلائٹ ٹکٹ ، پی سی آر ٹیسٹ ، رہائش اور دن کا تین وقت کا کھانا شامل ہیں جبکہ کچھ ہمسایہ ممالک کی پیش کردہ قیمتیں KD 300 سے KD 350 کے آس پاس ہیں۔

توقع کی جارہی ہے کہ کمپنیوں کی طرف سے نئی کم قیمتوں کے ساتھ پیکج آفرز موصول ہوں گی لیکن یہ وزیروں کی کونسل پر منحصر ہے کہ وہ مناسب فیصلہ کرے اور طریقہ کار کا تعین کرے۔

اس کے علاوہ ذرائع نے بتایا کہ کویت ایئر ویز نے کمپنی “کاسکو” سے کھانا فراہم کرنے کی پیش کش کی ہے۔

حوالہ
عرب ٹائمز
پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ