کویت

کویت: گاڑیوں کے شیشے کالے کرنے کی اجازت دے دی گئی

کویت اردو نیوز 08 نومبر: ڈرائیونگ ٹیسٹ میں ترمیم کے علاوہ گاڑی کے شیشے 70 فیصد کالے کرنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ ٹریفک نے کہا ہے کہ وہ متعلقہ قسم کے نجی یا عام طور پر ڈرائیونگ ٹیسٹ اور گاڑی کی قسم کے مطابق اتوار (8 نومبر 2020) سے نئے نظریاتی ڈرائیونگ ٹیسٹ سسٹم پر عمل درآمد شروع کردے گا۔ یہ اقدام عوامی انتظامیہ (ٹریفک سیکٹر) کی حکمت عملی کے تحت آتا ہے تاکہ نظام کو ترقی دی جا سکے، طریقہ کار میں سہولت پیدا ہو اور ٹریفک سے آگاہی کا معیار بلند ہوسکے۔

دریں اثناء محکمہ ٹریفک نے کالے شیشوں سے متعلق ٹریفک قانون میں 30 فیصد سے 70 فیصد تک ترمیم کی ہے۔ یہ نیا فیصلہ جو سرکاری گزٹ میں اشاعت کے بعد آج 8 نومبر 2020 ء سے عمل میں آیا ہے اس میں یہ شرط رکھی گئی ہے کہ گاڑیوں کے شیشے 70 فیصد سے زیادہ نہیں ہونا چاہئے۔
اس نئے فیصلے سے امریکی ممالک سے آنے والی گاڑیوں کی پریشانی ختم ہوگئی ہے کیونکہ کار کی رجسٹریشن کی تجدید کے وقت انہیں محکمہ ٹریفک کے تکنیکی انسپکٹروں نے مسترد کردیا تھا کیونکہ آلات کی مدد سے سورج کی سایہ کی فلم بندی کی فیصد کی پیمائش ہوتی تھی اور ڈرائیور کو خلاف ورزی جاری کی جاتی تھی۔

نئے فیصلے پر عمل درآمد کے آغاز کے ساتھ ہی زینہ اسٹریٹ میں خاص طور پر شویخ کے علاقے میں گاڑیوں کے لوازمات کی دکانوں کے مالکان اور کارکنان فیصلے کے بڑے کاروباری فوائد کی وجہ سے خود کار مالکان سے زیادہ خوش دکھائی دے رہے ہیں۔ آٹو سورج شیڈنگ کا بازار عروج پر ہے کیونکہ اس سے بہت سے افراد کو نئے فیصلے سے فائدہ ہوگا۔

مزید پڑھیں: ڈاکٹر اور دیگر میڈیکل شعبوں کے معاہدہ مدت میں توسیع

کارکن بشیر نے کہا کہ نیا فیصلہ اچھا ہے اور اس سے دکانوں اور کاروں کے مالکان کو فائدہ ہوگا۔ کار مالکان کو ٹریفک کی خلاف ورزیوں کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا اور دھوپ سے بھی حفاظت ہوگی اور کار میں ٹھنڈک برقرار رہے گی۔

اس کے نتیجے میں کارکن نذیر کا کہنا تھا کہ تھرمل شیڈنگ سے کار کی حفاظت کی جاسکتی ہے اور یہ نیا فیصلہ ان گاہکوں سمیت سب کے لئے فائدہ مند ہوگا جو پہلے ٹریفک کی خلاف ورزیوں سے خوفزدہ تھے لیکن اب محکمہ ٹریفک کے جنرل نے 70 فیصد کار شیڈنگ کی اجازت دے دی ہے جیسا کہ یہ ماضی میں ممنوع و غیر قانونی تھا اور یہ ہمارے کاروبار کو دوگنا کردے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ کورونا وائرس کے بحران کے دوران کساد بازاری کی دکانوں کا سامنا کرنا پڑا اس فیصلے سے بڑے فوائد ہوں گے۔

حوالہ
الرای
پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ