کویت

کویت: اپنے ممالک پھنسے ہوئے وزارت صحت کا فلپائنی طبئی عملہ کویت پہنچ گیا

کویت اردو نیوز 28 اکتوبر: کورونا وبائی بیماری کی وجہ سے بیرون ملک پھنسے ہوئے وزارت صحت کے فلپائنی ملازمین براہ راست پرواز کے ذریعے کویت پہنچ گئے۔

تفصیلات کے مطابق فلپائن میں پھنسے ہوئے کویت وزارت صحت (ایم او ایچ) کے فلپائنی ملازمین کا ایک گروپ پیر کی شب کویت میں فلپائن کے سفارتخانے کے تعاون اور الطیار ٹریولس کے زیر اہتمام منیلا سے کویت ایئرویز کی چارٹرڈ فلائٹ کے ذریعے کویت پہنچا جس میں کویت پہنچنے والے وزارت کے 28 ملازمین شامل ہیں۔

متعلقہ کویتی حکام سے تمام مطلوبہ سفری منظوری حاصل کرنے کے بعد 28 ایم او ایچ عملے پر مشتمل یہ گروپ کویت میں فلپائن کے سفیر محمد نورالدین پنڈوسینا لمونڈٹ اور فلپائن میں کویت کے سفیر موسیٰ صالح احمد الثوائخ کے ساتھ مل کر کویت روانہ ہوا۔ کویت میں تعینات فلپائنی سفیر نے الطیار ٹریولز کے چیئرمین فہد الباقر کی سربراہی میں ان کا شکریہ ادا کیا اور پھنسے ہوئے وزارت داخلہ کے عملے کی مدد کے لئے یہ اقدام اٹھاتے ہوئے امید ظاہر کی کہ پھنسے ہوئے ایم او ایچ کے تمام عملے کو جلد ہی واپس لائیں گے۔

مزید 30 ایم او ایچ عملہ اور ان کے 09 منحصر ہیں جو ابھی تک فلپائن میں پھنسے ہوئے ہیں اور براہ راست کویت جانے کے لئے ان کے سفری منظوری کے منتظر ہیں۔ اس سے قبل کویت کی حکومت نے 34 ممالک سے آنے والے شہریوں پر COVID-19 کے شدید کیسوں کی وجہ سے براہ راست کویت جانے پر پابندی عائد کردی تھی لیکن ممنوعہ ممالک کے تارکین وطن کو ایسے ممالک میں 14 دن گزار کر پی سی آر ٹیسٹ کے ساتھ کویت کے لئے پرواز کرنے کی اجازت دی گئی ہے جو غیر ممنوعہ قرار دیئے گئے ہیں۔

پھنسے ہوئے فلپائنی وزارت کے کچھ عملے نے دبئی کے راستے پرواز کرنے کا انتخاب کیا لیکن اکثریت ایم او ایچ سے سفری منظوری کا انتظار کر رہی ہے۔ پھنسے ہوئے فلپائنی وزارت کے عملے کے گروپ زیادہ تر نرسوں نے اس سے قبل جولائی میں فلپائنی سفارتخانے کی مدد لی تھی۔ ان کے مطابق کویت میں فلپائن کے سفارتخانے نے جولائی میں فلپائن میں پھنسے ہوئے ایم او ایچ عملے کی فہرست کے ساتھ وزارت داخلہ کو ایک خط بھیجا تھا۔

جولائی میں الطیار ٹریولز کے زیر اہتمام چارٹرڈ فلائٹ کے ذریعے ایم او ایچ کے 23 عملہ کے پہلے گروپ نے گذشتہ پیر جبکہ دوسرے گروپ نے گذشتہ پیر کی شب اڑان بھری تھی۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں خدمت میں شامل ہونے اور فلپائنی وزارت داخلہ کے عملے کی مدد کرنے پر خوشی ہے۔ ہم نے وبائی امراض اور سفری پابندیوں کے باوجود انہیں کویت واپس لانے کی پوری کوشش کی ہے۔ ہم نے کویتی حکام کا شکریہ ادا کیا ہے کہ وہ ہمیں 28 مسافروں کو واپس لے جانے کی اجازت دے رہے ہیں۔ ہمیں امید ہے کہ باقی 30 اور ان کے منحصر افراد کو بھی منظوری دی جائے گی۔

مزید پڑھیں: خیطان کے رہائشیوں کی مشکلات، بیچلرز کا فیملیز کے ساتھ رہنا بڑا مسئلہ

ایم او ایچ کے 28 عملہ میں سے 9 جو جن کا رہائشی ویزا ختم ہوگیا تھا لیکن انہیں ڈی جی سی اے DGCA کے سرکلر نمبر 2020/69 کے تحت داخلے کی اجازت دی گئی۔ فلپائن میں 7 ماہ سے زائد عرصے سے پھنسے ہوئے نرسوں میں سے ایک نے کہا کہ ہم کویت حکومت اور کویت امیگریشن حکام کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے ہمارا کویت میں پرتپاک استقبال کیا۔ مسٹر فہد، مسٹر بوبی، محترمہ مارلن، محترمہ میلانی کے لئے الطیار ٹریولز کا بھی شکریہ نائب قونصل ایڈرین بکیے نیز سفیر لمونڈٹ اور سفیر الثوائخ کا بھی شکریہ جنہوں نے ہمیں کویت واپس لانے کے لئے بھرپور کوششیں کی۔ ہم امید کرتے ہیں اور دعا کرتے ہیں کہ فلپائن میں ہمارے باقی ساتھی بھی جلد ہی واپس آ سکیں گے۔

دریں اثنا ٹریولز آپریشنز منیجر بوبی تھامس نے کہا کہ الطیار ٹریولز نے باقی پھنسے ہوئے وزارت داخلہ کے عملے کو کویت واپس آنے میں مدد کرنے کا عزم کیا ہے۔ “ہم تمام کاغذی کاموں کے ساتھ دوبارہ کام شروع کریں گے اور امید ہے کہ وہ جلد ہی واپس آ سکیں گے۔” لمونڈٹ اور التوئیخ نے کویت کے متعلقہ حکام سے سفری منظوری حاصل کرنے میں مدد کرنے کا بھی وعدہ کیا۔

: Michelle Fe Santiago عرب ٹائمز اسٹاف کے ذریعہ

حوالہ
عرب ٹائمز
پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ