کویت

کویت: حقہ کیفوں کو کھولنے کی تجویز مسترد

کویت اردو نیوز 29 ستمبر: ہر صارف کے لئے ایک حقے کے استعمال کی درخواست پیش کر دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق مسلسل دوسرے دن کیفوں اور ریستوران کے مالکان نے گذشتہ 7 ماہ کے دوران ہونے والے نقصانات کو روکنے کے لئے اپنے مطالبات کی تجدید اور انفیکشن کی منتقلی کو روکنے کے لئے تمام احتیاطی تدابیر اور صحت پر قابو پانے کی تیاری پر زور دیا۔

روزنامہ القبس کو ذرائع نے بتایا کہ کیفے کے مالکان کی جانب سے حقہ کیفوں کو دوبارہ کھولنے کے لئے پیش کردہ نئی تجاویز کا انکشاف کیا خاص طور پر ہر صارف کے لئے ایک نو ساختہ حقہ مختص جو صرف ایک بار ایک گاہک کے لئے ہو گا اور وہ اسے اپنے گھر لے جاسکتے ہیں جبکہ پیشکش کے وقت اس کی قیمت میں اضافہ بھی ہو گا۔

ان تجاویز میں صرف ایک وقت کے لئے پلاسٹک کے پائپ کا استعمال بھی ہے جو ہر گاہک کے تمباکو نوشی کرنے کے بعد اسے دھونا اور تبدیل کرنا ہو گا جبکہ اس کے علاوہ کیفے کے داخلی راستے پر گاہک کے درجہ حرارت کی پیمائش کرنے اور اس کے لئے باقاعدگی سے مسح کرنا بھی شامل ہو گا۔

کیفے اور ریستوران کے مالکان نے اپنے اجتماع کے دوران زور دے کر کہا کہ کچھ اداروں میں 90 فیصد تک صارفین کے داخل ہونے کی اجازت ہے یہ نوٹ کرتے ہوئے کہ جو بھی چائے اور کافی پینا چاہتا ہے وہ اسے گھر تک مہیا کی جائے گی جبکہ حقہ واپس کرنا ضروری ہو گا۔ کاروبار مالکان کا کہنا ہے کہ یہ کاروبار نہ ختم ہونے والے قرضوں اور نقصانات کا ایک حصہ بن گیا ہے۔

وزارت صحت اور کویت کی میونسپلٹی پر دباؤ ڈالا گیا ہے کہ کسی مخصوص تقاضوں کے مطابق حقہ کی واپسی کی اجازت دی جائے جبکہ سینے کے امراض اور دل کی بیماریوں کے ماہر ڈاکٹروں نے تمباکو نوشی کی اجازت کے خلاف انتباہ کیا کہ کورونا کے پھیلاؤ کی روشنی میں حقہ کی نمی بیکٹیریا یا انفیکشن پھیلنے کا باعث بن سکتا ہے۔

سینے کے امراض کے اسپتال میں ماہر امراض قلب ڈاکٹر عدنان الحدلق نے روزنامہ القبس کو بتایا کہ شیشہ یا سگریٹ پینے سے صحت کو بہت نقصان ہوتا ہے۔

مزید پڑھیں: پاکستان میں بین الاقوامی مسافروں کے لیے شرائط طے کر لی گئیں۔

ایک اور ڈاکٹر جس نے اپنا نام ظاہر کرنے کو ترجیح نہیں دی جو جابر اسپتال کی فرنٹ رو میں شامل ہے نے تصدیق کی کہ عوامی مقامات پر حقہ کی فراہمی اور اس کا استعمال کیسوں کو کم نہیں کرے گا اور طبی عملے کی تھکن میں مزید اضافہ کرے گا جو کئی مہینوں سے بغیر رکے کام کر رہے ہیں۔

ذرائع نے روزنامہ القبس کو مزید بتایا کہ حقہ کی واپسی کی اجازت کا فیصلہ چوتھے یا پانچویں مرحلے میں شامل نہیں تھا۔ گزشتہ روز متعلقہ کمیٹی کے ذریعے ہونے والے اجلاس میں ان تمام تجاویز کو مسترد کر دیا گیا جس میں حقہ کیفوں کی واپسی کے لئے پلاسٹک کے ہکس کے استعمال اور پانی کو تبدیل یاجراثیم سے پاک کرنے کی تجاویز دی گئی تھیں۔

انہوں نے اشارہ کیا کہ فی الحال وزارت صحت کی جانب سے حقہ کی واپسی کی اجازت کے لئے منظوری نہیں ہے۔

حوالہ
روزنامہ القبس

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

Open

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ