کویت

کویت: PACI اب سے 24 گھنٹے کام کرے گی

کویت اردو نیوز 10 ستمبر: پبلک اتھارٹی برائے سول انفارمیشن کے پاس صرف 45 کی حد مقرر

تفصیلات کے مطابق کورونا بحران کے باعث کام میں خلل کو ختم کرنے اور لوگوں کے شدید ہجوم پر قابو پانے کے لئے پبلک اتھارٹی برائے سول انفارمیشن (پی اے سی آئی) نے 12 گھنٹے کام کرنا شروع کردیا ہے۔ کام کے اوقات صبح 6 بجے سے شام 6 بجے تک ہیں۔ پبلک اتھارٹی برائے سول انفارمیشن یومیہ 15,000 تیار شدہ کارڈ جاری کرے گی جبکہ پچھلے ہفتے 12000 کارڈ جاری کئے گئے ہیں۔

روزنامہ القبس کی رپورٹ کے مطابق پبلک اتھارٹی برائے سول انفارمیشن کے ڈائریکٹر پروڈکشن اینڈ ڈسٹری بیوشن ڈپارٹمنٹ کے مطابق یہ پلان صرف 45 دن میں اتھارٹی میں ہجوم کا خاتمہ کردے گا۔ المیتن نے کہا کہ اتھارٹی نے گذشتہ دو ماہ کے دوران شہریوں اور گھریلو ملازمین کے کارڈز کو ترجیح دی ہے۔ اتھارٹی نے 113،000 کویتی شہریوں کے کارڈز اور 123،000 گھریلو ملازمین کے کارڈز جاری کئے ہیں اس کے علاوہ ان زیر التواء کارڈوں کے اجراء کو بھی مکمل کیا گیا جنکی درخواست مارچ، اپریل اور مئی میں کی گئی تھی تاہم اب اتھارٹی کو جون اور اسکے بعد کے مہینوں کے تیار شدہ کارڈز جاری کرنے ہیں۔

انہوں نے اس بات کی تصدیق کی کہ اتھارٹی 45 دن کے دوران یومیہ 1500 کارڈز جاری کرے گی جو تاخیر کو ختم کرنے میں معاون ثابت ہوگی۔ اسکے علاوہ اتھارٹی نے 211,000 کارڈز مالکان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ بغیر کسی تاخیر کے ہیڈکوارٹر جہرہ اور احمدی کی عمارتوں میں تقسیم شدہ کارڈز کو مشینوں سے نکال لیں۔

یہ خبر بھی پڑھیں: حقہ (شیشہ) کیفے بدستور بند رہیں گے

انہوں نے نشاندہی کی کہ جاری کرنے میں تاخیر کورونا وائرس بحران کے دوران بند ہونے کے نتیجے میں ہوئی ہے “لیکن ہم 8 جولائی سے اب تک 2 ماہ کے اندر 450،000 سول شناختی کارڈ جاری کرنے میں کامیاب رہے جن میں سے 277،000 فراہم کئے جا چکے ہیں۔

انھوں نے اتھارٹی کے ڈاریکٹر جنرل موسید العسوسی کی کاوشوں کو سراہا اور کہا کہ انکی حمایت سے ترسیل کی 12 گھنٹے کے مدت میں کارڈز کی فراہمی میں تاخیر کا خاتمہ ہوجائے گا انہوں نے اشارہ کیا کہ اتھارٹی ہفتے کے آخر میں سول کارڈز کے اجراء کو تیز کرنے کے لئے کام کررہی ہے۔ گذشتہ ہفتے کے آخر میں اتھارٹی نے 30،000 کارڈ جاری کئے تاکہ ہفتے کے آغاز میں ہونے والی بھیڑ سے بچا جا سکے۔

انہوں نے بتایا کہ “گذشتہ اتوار اور پیر کے روز 29،000 کارڈز حوالے کردیئے گئے تھے اور پیر کو صبح 11 بجے تک 5،000 افراد نے ان کے کارڈ وصول کیے۔ یہ تعداد دوپہر کے ایک بجے دن دوگنی ہوگئی اور کام کے اختتام پر 15،000 تک پہنچ گئی تھی۔ روزانہ صبح 6 بجے سے 8 بجے کے درمیان قریب ایک ہزار کارڈز کی فراہمی ہوتی ہے۔ انہوں نے توقع کی کہ ہوم ڈیلیوری کے ذریعے سول کارڈ کی فراہمی خدمات کارڈ جمع کرنے اور ان کے مالکان کی شرکت میں ناکامی کے مسئلے کو حل کرنے میں معاون ثابت ہوں گی۔

حوالہ
عرب ٹائمز
پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ