کویت

کویت: PACI کی جانب سے نئی سروس E-Envelope متعارف کرا دی گئی

کویت اردو نیوز 29 اگست: پی اے سی آئی (پبلک اتھارٹی برائے سول انفارمیشن) نے ای لفافہ (E-Envelope) نظام متعارف کرا دیا۔

تفصیلات کے مطابق پبلک اتھارٹی فار سول انفارمیشن (پی اے سی آئی) نے عام شہریوں اور تارکین وطن کے لئے خدمات کی سہولت کے لیے ایک نیا خودکار نظام “ای انویلپ” شروع کیا۔ روزنامہ الرائ کی رپورٹ کے مطابق اس سروس میں پانچ قسم کے لین دین کا احاطہ کیا گیا ہے جو پانچ مشینوں کے ذریعے دستی طور پر انجام دیئے گئے تھے۔

روزنامہ کے حوالے سے ذرائع نے مزید کہا کہ نیا خودکار نظام میں وقت کی بچت ہو گی کیونکہ اس سسٹم کے ذریعے کوئی بھی شخص انٹرنیٹ کے ذریعے آسانی کے ساتھ ڈیسک ٹاپ کمپیوٹر یا موبائل فون کے ذریعہ فیملی ویزا سمیت غیر کویتی تارکین وطن کے اقامہ کی تجدید، گھریلو ملازمین کی پہلی بار اندراج، نئے پیدا ہونے والے بچوں کے لئے ڈیٹا مکمل کرنے اور کویتی شہریوں کے لئے تجدید کے پورے عمل کو مکمل کر سکے گا۔

یہ خبر بھی ضرور پڑھیں: جزوی کرفیو کا خاتمہ، سرکاری دفاتر میں ملازمین کی تعداد میں اضافہ

اس کے علاوہ ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ پی اے سی آئی مارچ اور اپریل کے مہینوں میں دو لاکھ سے زیادہ سول شناختی کارڈوں کی فراہمی مکمل کرنے کے بعد گذشتہ مئی میں جاری کردہ کارڈز کو تقسیم کرنے کی تیاری کر رہا ہے۔

اتھارٹی درخواست دہندگان کو صبح نو بجے سے شام پانچ بجے تک بغیر کسی اپائنٹمنٹ کے سروس مہیا کرتی ہے بشرطیکہ کارڈ ڈلیوری کے لئے تیار ہو اور ڈیوائس نمبر درخواست دہندہ کو معلوم ہو۔
جنوب الصباحیہ میں احمدی برانچ کے افتتاحی عمل سے جنوب السورہ میں شناختی کارڈ کی فراہمی مرکز پر دباؤ کم ہوا جہاں مبارک الکبیر اور احمدی گورنریٹ کے رہائشی اپنے شہری شناختی کارڈ حاصل کریں گے اس کے علاوہ جہرا سنٹر کو بھی گورنریٹ کے رہائشیوں کو سروس مہیا کرنے کے لیے مختص کیا گیا ہے جبکہ جنوب السورہ سنٹر کو فروانیہ، حولی اور کیپٹل گورنریٹس کے رہائشیوں کے لئے وقف کیا گیا ہے۔

کویت اردو نیوز کے یوٹیوب چینل پر یہ خبر بھی ضرور دیکھیں

حوالہ
عرب ٹائمز
پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

Open

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ