کویت

کویت: پاکستانی اور بھارتی کمیونٹی نے خون عطیہ کر کے اپنے آزادی کے دن منائے

کویت اردو نیوز 19 اگست: پاکستان اور بھارت کے 74 ویں یوم آزادی کے موقع پر دونوں ممالک نے خون کے عطیہ کرنے کی مہم سے منایا۔

پاکستان:

تفصیلات کے مطابق کویت سنٹرل بلڈ بینک کی ہنگامی کال کے جواب میں یہ مہم چلائی گئی کیونکہ کویت کو کوویڈ 19 کی وجہ سے خون کے ذخائر میں شدید کمی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ بلڈ کیمپ میں ان لوگوں کو بھی خراج تحسین پیش کیا گیا جنھوں نے جدوجہد آزادی کے دوران اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا اور اپنا خون بہایا۔

کویت میں پاکستانی کمیونٹی نے بھاری شرکت اور عطیات کے ذریعے یکجہتی کا اظہار کیا۔ 5 گھنٹے کے قلیل عرصہ میں مجموعی طور پر 251 پِنٹس خون جمع کیا گیا جو وزارت صحت کویت کے ذریعہ تجویز کردہ تمام ایس او پیز پر عمل پیرا تھا۔ اس پروگرام کا اہتمام پاکستانی بلڈ ڈونرز ایسوسی ایشن (پاک ڈونرز) نے اسلامک ایجوکیشن کمیٹی کویت، کویت سنٹرل بلڈ بینک کی شراکت داری کی حیثیت اور اسلامی جمہوریہ پاکستان کے سفارتخانے کی بھرپور حمایت اور معاونت کے ساتھ کیا۔

2011 سے قائم پاکستانی بلڈ ڈونرز ایسوسی ایشن کویت میں پاکستانی کمیونٹی میں اپنی نوعیت کی پہلی تنظیم ہے جس کا مقصد خون کے عطیہ کے سنگین معاملے کے بارے میں شعور اجاگر کرنا ہے۔

کویت میں تعینات سفیر پاکستان جناب سید سجاد حیدر نے بلڈ بینک کا دورہ کیا اور کویت میں پاکستانی کمیونٹی کے عزم اور لگن کو سراہا۔

یہ خبر بھی ضرور پڑھیں: وزٹ ویزہ کی مستقل رہائشی ویزہ پر منتقلی ختم

انہوں نے اجتماع سے خطاب کیا اور کوویڈ 19 ایس او پیز کے رہنما اصولوں کی پاسداری اور حکومت کویت کی طرف سے جاری کردہ انتظامات کو بھی سراہا۔ بلڈ کیمپ دوپہر 1 بجے سے شام 7 بجے تک جاری رہا چونکہ اس کیمپ میں عطیہ دہندگان کی ایک بڑی تعداد نے حصہ لیا لہذا بلڈ بینک کی جانب سے موثر انتظام کرتے ہوئے اضافی بیڈ مختص کردیئے گئے۔

چونکہ 14 اگست پاکستان کی آزادی کا دن ہے لہذا پاکستان کی یوم آزادی کے موقع پر کیک کاٹنے کی تقریب بھی منعقد کی گئی۔ سفیر پاکستان جناب سید سجاد حیدر نے ٹیم پاک ڈونرز اور ٹیم اسلامک ایجوکیشن کمیٹی کویت (یوتھ ونگ) کے ہمراہ کیک کاٹا۔ انہوں نے کویت میں پاکستان اور پاکستانیوں کے مثبت پہلوؤں کو فروغ دینے کے لئے ٹیم پاک ڈونرز اور ساتھیوں کی تعریف کی کہ وہ انسانیت کے لئے اس طرح کے منظم پروگراموں کا اہتمام کریں۔

بھارت:

بلڈ ڈونرز کیرالہ کویت چیپٹر اور کساراگوڈ تارکین وطن ایسوسی ایشن الفاحیل کمیٹی نے بھی مشترکہ طور پر بھارت کا 74 واں یوم آزادی منایا جس میں 13 اگست کو العدان میں خون کی منتقلی کے مرکز میں خون کے عطیہ کا کیمپ لگایا گیا تھا۔

بھارتی آزادی کی 74 ویں برسی کے موقع پر منعقدہ تقریب میں 74 غیر ملکیوں نے خون کا عطیہ کیا۔

اگرچہ کوویڈ 19 وبائی امراض کی وجہ سے ثقافتی پروگرام اور معاشرتی اجتماعات ممکن نہیں تھے لیکن اس وبا کے ساتھ ایک بے مثال محاذ پر غیر ملکی کمیونٹی کے سو سے زیادہ افراد اس عظیم کام اور صحت کے کارکنوں سے اظہار یکجہتی کرنے کے لئے جمع ہوئے۔

مرکزی کمیٹی کے صدر ستار کنیل نے اس کیمپ کا افتتاح کیا جو کہ KEA Fhaheel ایریا کمیٹی کے صدر اشرف کچناتھ کے زیر اہتمام تھا۔

تمام 74 عطیہ دہندگان کو سرٹیفکیٹ بھی جاری کردیئے گئے۔ بلڈ ڈونرز کیرالہ کویت چیپٹر کے زیر اہتمام معاشرتی تنظیموں کے ساتھ مل کر کورونا وبائی بیماری کی وجہ سے منتقلی مراکز میں خون کی کمی اور وزارت صحت کویت پروٹوکول پر سختی سے عمل پیرا ہونے کے لئے خون ڈونیشن کیمپ لگائے جارہے ہیں۔

پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

Open

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ