کویت

کویت: سرکاری اقامہ کی پرائیویٹ شعبے میں منتقلی ختم کر دی گئی

کویت سٹی 19 جولائی: روزنامہ عرب ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق سرکاری سیکٹر سے نجی سیکٹر میں اقامہ کی منتقلی پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پبلک اتھارٹی برائے افرادی قوت کے جنرل ڈائریکٹر احمد الموسیٰ نے اعلان کیا ہے کہ کارکنوں کو سرکاری شعبے سے پرائیویٹ شعبے میں اقامہ منتقل کرنے پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

الموسیٰ نے ایک پریس بیان میں کہا کہ اتھارٹی نے ملازمین کی اقامہ منتقلی سے متعلق نیا قانون 2020 کی قرار داد نمبر 367 جاری کی جس کے تحت کارکن کی ایک آجر (کفیل) سے دوسرے آجر کو منتقلی کی ضروریات کے بارے میں 2015 کے انتظامی فیصلہ نمبر 842 میں ترمیم کی ضرورت ہے۔

انہوں نے بتایا کہ کارکنان کو سرکاری شعبے سے نجی شعبے میں منتقل کرنے پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ وزیر سماجی امور اور وزیر مملکت برائے معاشی امور مریم العقیل کی ہدایت پر لیا گیا ہے تاکہ اس سلسلے میں ریاست کی جانب سے کی جانے والی کوششوں کی روشنی میں لیبر مارکیٹ کو زیادہ سے زیادہ کنٹرول کیا جا سکے۔

یہ خبر بھی پڑھیں: ورک پرمٹ پر نئی پابندیاں عائد

اس فیصلے میں کویتی خواتین کے غیر کویتی شوہروں اور بچوں اور کویتی شہریوں کی غیر کویتی بیویاں، فلسطینی اور طبی پیشہ ور افراد جن کے پاس وزارت صحت سے میڈیکل سروسز جیسے ڈاکٹروں ، نرسوں اور دیگر افراد کے مطابق طبی خدمات میں وزارت صحت کے طریقہ کار کے ساتھ تعلیم حاصل کرنے کا لائسنس ہے کو اس فیصلے میں شامل نہیں کیا گیا ہے۔

حوالہ
عرب ٹائمز

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

Open

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ