کویت

کویت: کمپنیاں تنخواہ کا سرٹیفکیٹ پیش کیے بغیر ملازمین کے اقامہ کی تجدید کرسکتی ہیں

کویت سٹی 17 جولائی: روزنامہ عرب ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق کمپنیاں تنخواہ کا سرٹیفکیٹ پیش کیے بغیر ملازمین کے اقامہ کی تجدید کرسکتی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پبلک اتھارٹی برائے افرادی قوت نے بتایا ہے کہ آجر / کمپنی کی فائلوں میں اندراج شدہ ملازمین کے لئے تنخواہ کا سرٹیفکیٹ پیش کیے بغیر ورک پرمٹ کی تجدید جائز ہے۔

اتھارٹی کے جنرل منیجر احمد الموسیٰ نے کویت کے مقامی خبر رساں ادارے کویت نیوز ایجنسی (کونا) کو بتایا کہ یہ بات سماجی امور کی وزیر اور اقتصادی امور کی وزیر مملکت مریم العقیل کی ہدایت پر آجروں کی سہولت کے لیے کام کے اجازت نامے کی تجدید کے متعلق لین دین کو مکمل کرنے میں آسانیاں فراہم کرنے کے لئے کی گئی ہے۔

الموسیٰ نے مزید کہا کہ کمپنی فائلوں میں رجسٹرڈ ملازمین کے ورک پرمٹ کی تنخواہ کا سرٹیفکیٹ پیش کرنے کی ضرورت کے بغیر تجدید کی درخواستیں جمع کروانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

یہ خبر بھی پڑھیں: ائیر لائنز کویت ائیر پورٹ کی منظوری کی منتظر

انہوں نے وزیر مریم العقیل کی انتھک محنت، مستقل کوششوں اور لیبر مارکیٹ میں کورونا وائرس وبائی امراض کے پھیلاؤ کے اثرات کو کم کرنے کے لئے شکریہ ادا کیا۔

حوالہ
عرب ٹائمز
پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

ایک تبصرہ

  1. اسلام علیکم ۔ہم وہ پاکستانی جو کرونا کے وجہ سے کویت واپس جانے سے قاصر و متاثر ہوئے ہیں کیا ان کے کے لیے پاکستان یا کویت سے کوئی مالی امداد کا کوئی پیکج ہے ؟
    نہ ہم کو کویت ( کمپنی ) کی طرف سے تنخوا جار ی رہا اور نہ پاکستان حکومت کی طرف سے کوئی مالی امداد ہوئی۔ نہ کوئی رمضان پیکج اور نہ عید پیکج ۔
    ہمارا تو وہی گزارا تھا جو باہر کماتے تھے لیکن ابهي قرض لیتے رہتے ہیں اور مشکل سے دو چار ہیں ۔
    ان تمام پاکستانیوں کے لئے جو کرونا کی وجہ سے کویت واپس جانے سے متاثر ہوئے ہے حکومت پاکستان اور حکومت کویت سے مالی امداد کی اپیل کی جاتی ہے تاکہ اپنے مشکل لمحات کو سمبل سکے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ