کویت

کورونا سے پاک سرٹیفکیٹ لانا لازم

کویت سٹی 18 جون: روزنامہ عرب ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق حولی، نقرہ اور خیطان کے کچھ علاقوں کا قرنطین ختم کرنے کا اعلان کر دیا گیا ہے جبکہ کویت واپس آنے والے مسافروں کو کورونا سے پاک سرٹیفکیٹ اپنے ساتھ لانا لازم ہو گا۔

تفصیلات کے مطابق حکومت نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کی وجہ سے عائد پابندیوں میں نرمی لانے کا فیصلہ کرلیا ہے تاہم اگلے ہفتے پبلک سیکٹر کے کارکنوں کو اپنے دفاتر میں واپس جانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

حکومت کے ترجمان طارق المزرم نے ایک آن لائن نیوز کانفرنس کو بتایا کہ حکومت نے کویتی شہریوں میں زیادہ تعداد میں انفیکشن کی وجہ سے معمول کی زندگی کی بحالی کے منصوبے کے پہلے مرحلے میں توسیع کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزارت صحت وائرس کی صورتحال کا جائزہ لے گی اور آئندہ ہفتے اس کی رپورٹ کابینہ کے پاس بھیجے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ کابینہ نے اگلے اتوار تک وزراء کو عوام کی خدمات کے لئے تفویض کیا۔ المزرم نے کرفیو اوقات میں تبدیلی کے حوالے سے بتایا کہ جزوی کرفیو کےاوقات 21 جون سے شام 7 بجے سے صبح 5 بجے تک کردیئے گئے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت نے اگلے اتوار تک حولی، النقرہ جبکہ خیطان کے چند بلاکس جن کو قرنطین کیا گیا تھا کو کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کوئی بھی شخص جو سفر کرنا چاہتا ہے اسے سفر سے 10 دن پہلے وزارت داخلہ کے لئے درخواست جمع کروانی ہو گی۔ حکومت مسافروں کو تنبیہ کرتی ہے کہ جو کویت آنے کے خواہاں سفر سے چار دن پہلے پی سی آر ٹیسٹ سرٹیفکیٹ کی عربی کاپی فراہم کریں کہ وہ وائرس سے پاک ہیں۔ یاد رہے کہ یہ سرٹیفکیٹ دوسرے ممالک میں پھنسے کویتی شہریوں کے فرسٹ ریلیشنز کے لئے ہے جو کویت واپس آ سکتے ہیں اور یہی شرط غیر کویتیوں کے لئے بھی ہو سکتی ہے لیکن اپنے ممالک میں پھنسے تارکین وطن کے لیے فی الحال کویت نے اپنا ائیر پورٹ بحال نہیں کیا۔

حوالہ: عرب ٹائمز

پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

Open

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ