کویت

کھلے میں کام کرنے پر پابندی عائد

کویت سٹی 31 مئی: کویت کے خبر رساں ادارے “کویت نیوز ایجنسی” کی رپورٹ کے مطابق اگست کے آخر تک صبح 11 بجے سے شام 4 بجے تک کھلے عام کام کرنے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔


تفصیلات کے مطابق پبلک اتھارٹی برائے افرادی قوت نے اعلان کیا ہے کہ وہ کل یکم جون سے اگست کے آخر تک دوپہر 11 بجے سے شام 4 بجے تک کھلے علاقوں میں ملازمت پر پابندی کے بارے میں انتظامی فیصلے نمبر 535/2015 پر عمل درآمد شروع کردے گا۔


اتھارٹی کے جنرل ڈائریکٹر احمد الموسی نے آج بروز اتوار ایک پریس بیان میں کہا ہے کہ کمیشن میں معائنہ کرنے والی ٹیمیں 3 ماہ کی مدت کے دوران اس فیصلے پر عمل درآمد کی پیروی کریں گی اور کام کرنے کی جگہوں پر ایک اچانک معائنہ مہم کی مدد سے خلاف ورزی کی نگرانی کرے گی جبکہ خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت قانونی اقدامات اٹھائے جائیں گے۔


الموسی نے اس بات کی نشاندہی کی کہ اس فیصلے کا مقصد اس عرصے کے دوران موسم کی شدید گرمی سے مزدوروں کو بچانا ہے اور اس طرف اشارہ کیا کہ سخت موسمی حالات کی وجہ سے سال کے اس عرصے کے دوران ان علاقوں میں کام کرنا مشکل ہے جس کے مطابق بیان کئے گئے اوقات کار میں کام کرنا مشکل ہے۔ انہوں نے وضاحت کی کہ ان اوقات میں کام کی ممانعت کے فیصلے پر عمل آوری کا مقصد کام کے اوقات کو کم کرنا نہیں بلکہ کام کو منظم کرنا ہے اور اس بات کو یقینی بنانے کے لئے اس بات پر زور دیا جارہا ہے کہ جو منصوبے عمل میں لائے جائیں وہ کسی بھی طرح کے نقصان سے دوچار نہیں ہوں گے۔


انہوں نے نشاندہی کی کہ پچھلے سالوں کے دوران اس فیصلے کے نفاذ کو بہت سارے شعبوں میں بہت سی کمپنیوں کی منظوری ملی ہے اس کے علاوہ کویت نے عوامی مفاد کے ساتھ ساتھ بین الاقوامی لیبر اسٹینڈرڈز کو بھی مدنظر رکھا ہے۔


انہوں نے انکشاف کیا کہ اس فیصلے پر عمل درآمد کا مطلب یہ ہے کہ مالکان اپنے تمام کارکنوں کی صحت اور حفاظت کو یقینی بنائیں اور ساتھ ہی اس بات کو یقینی بنائیں کہ لیبر لاء کنٹرول اور قواعد و ضوابط اور اس پر قابو پانے والے فیصلے پورے ہوں۔


حوالہ: عرب ٹائمز

پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ