کھیل

پاکستان بمقابلہ انگلینڈ: دو وکٹوں کے نقصان پر 100 رنز

پاکستان اور انگلینڈ کے مابین تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا پہلا میچ مانچسٹر میں جاری ہے اور پاکستان کو پہلے سیشن میں ہی دو وکٹوں کا نقصان اٹھانا پڑا ہے۔

کھانے کے وقفے کے بعد پاکستانی بلے بازوں نے محتاط مگر پراعتماد انداز میں اننگز کو سنبھالا اور سینتیس اوورز کے اختتام پر دو وکٹوں کے نقصان پر 100 رنز بنائے ہیں۔ شان مسعود اور بابر اعظم نے وکٹیں گرنے کے بعد اچھی پارٹنرشپ بنائی۔ جو روٹ نے تیس اوورز کے بعد سپنر ڈوم بیس کو متعارف کرایا ہے۔ شان مسعود 38 رنز پر کھیل رہے ہیں جبکہ بابر اعظم نے نسبتاً تیز رفتار سے 39 رنز سکور کیے ہیں۔

اس میچ میں پہلی بار ٹی وی امپائر نو بالز کو مانیٹر کریں گے اور بالر کے کریز سے آگے نکلنے پر اس میچ میں ایک بال کو نو بال قرار دے چکے ہیں۔ خیال ہے کہ مستقبل میں ٹیسٹ چیمپیئنشپ میں اس کا استعمال ہوگا۔

کورونا کی وبا کی وجہ سے تماشائیوں کو میچ دیکھنے کے لیے میدان میں داخلے کی اجازت نہیں دی گئی ہے۔

اس میچ کی ایک خاص بات یہ بھی ہے کہ انٹرنیشنل کرکٹ میں پہلی بار ایسا میچ کھیلا جا رہا ہے جس میں ٹی وی امپائر فرنٹ فٹ نو بال کا فیصلہ دے گا جس کا مطلب ہےکہ آن فیلڈ امپائر کو بولر کی نو بال نہیں دیکھنی پڑے گی۔

اس میچ میں پاکستان کی ٹیم میں دو لیگ سپنرز شاداب خان اور یاسر شاہ کو شامل کیا گیا ہے جبکہ بلے بازی کی ذمہ داری شان مسعود، عابد علی، اظہر علی، بابر اعظم، اسد شفیق اور رضوان احمد کے کاندھوں پر ہے جبکہ فاسٹ بولنگ سکواڈ شاہین آفریدی، محمد عباس اور نسیم شاہ پر مشتمل ہے۔

ادھر جو روٹ کی قیادت میں انگلینڈ کی ٹیم میں ڈوم سبلی، روری برنز، بین سٹوکس، اولی پوپ، جوس بٹلر، کرس ووکس، ڈوم بیس، سٹوارٹ براڈ اور جیمز اینڈرسن پر مشتمل ہے۔

پوری خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں شکریہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

آپ اس خبر کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں

ایڈ بلاک پتہ چلا

برائے مہربانی ایڈ بلاک کو بند کریں شکریہ